14

بچوں کےخلاف جنسی جرائم کی تفتیش کیلیے ایف آئی اے نے ٹیم بنادی

فیڈرل انویسٹی گیشن ایجنسی نے بچوں کے خلاف جنسی جرائم کی تفتیش کے لئے خصوصی کمیٹی بنادی ۔تفصیلات کے مطابق ڈپٹی ڈائریکٹر ایف آئی اے خا لد انیس کا کہنا تھا کہ ڈی جی ایف آئی اے کی ہدایت پر بچوں کے خلاف جنسی جرائم کی تحقیقات کادائرہ وسیع کردیا ہے ۔ڈپٹی ڈائریکٹرایف آئی اے سا ئبرکرائمز کا کہنا تھا کہ ملزم سے برآمد60جی بی ڈیٹاسکین کرلیاگیا،ممنوعہ فلمیں دیگرملکوں کے بچوں کی ہیں اس میں پاکستان کے کسی بچے کی کوئی وڈیو شامل نہیں۔

ایف آئی اے سائبر کرائم ونگ نے ملزم کو عدالت پیش کرکے اس کا چار روزہ ریمانڈ حاصل کرلیا ہے ۔ملزم کااس حوالے سے بیان سامنے آیا ہے کہ وہ صرف ذہنی سکون کی خاطر ایسا کرتا تھا پیسوں کے لئے نہیں۔خیال رہے کہ ایف آئی گزشتہ روز اس ملزم کوجھنگ سے گرفتار کیا تھا اس پرالزام ہے کہ یہ بچوں کی فحش ویڈیوز بنا کر مختلف ویب سائٹس پر اپ لوڈ کرتا ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں