45

چیف جسٹس کا شیخ زید ہسپتال کے لیور ٹرانسپلانٹ یونٹ کی بندش کا ازخودنوٹس، وزیر صحت سلمان رفیق طلب

لاہور : چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثارنے شیخ زید ہسپتال کے لیورٹرانسپلانٹ یونٹ کی بندش کاازخود نوٹس لے لیا اوروزیر صحت پنجاب سلمان رفیق سمیت مانیٹرنگ کمیٹی کے ارکان کو دوپہرڈھائی بجے طلب کر لیا۔
تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس آف پاکستان کی سربراہی میں 3رکنی بنچ نے ازخودنوٹس کی سماعت کی،دوران سماعت چیف جسٹس نے کہا کہ 5 ماہ سے شیخ زیدہسپتال کالیورٹرانسپلانٹ یونٹ بندہے،ڈائریکٹرٹیکنیکل نے عدالت کو بتایا کہ ڈونرکے انتقال پرٹرانسپلانٹ یونٹ کی بندش کافیصلہ کیاگیا،چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ ہیومن آرگن ٹرانسپلانٹ اتھارٹی کے پاس بندش کااختیارکہاں سے آگیا؟،ایک ڈونرکی موت سے آپ نے جگرکی پیوندکاری روک دی؟۔ڈاکٹر مرتضیٰ نے بتایا کہ مریضوں کے جگرکی پیوندکاری الشفاہسپتال سے کرائی جارہی ہے،عدالت نے کہا کہ الشفاہسپتال کوفائدہ دینے کیلئے آپ نے شیخ زیدکالیورٹرانسپلانٹ یونٹ بندکررکھاہے،چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ الشفاہسپتال کوایک ٹرانسپلانٹ کے کتنے پیسے دیئے جارہے ہیں؟،ڈائریکٹرٹیکنیکل نے بتایاکہ شیخ زیدمیں ایک مریض سے 35لاکھ روپے لیے جاتے ہیں،جبکہ الشفا ہسپتال کوایک مریض کے 40لاکھ 10ہزارروپے دیئے جارہے ہیں۔

عدالت نے کہا کہ جنوری سے یونٹ بندہے،5ماہ گزرنے کے باوجودانکوائری رپورٹ مکمل نہیں ہوئی،چیف جسٹس ثاقب نثارنے شیخ زید ہسپتال کے لیورٹرانسپلانٹ یونٹ کی بندش کاازخودنوٹس لیتے وزیر صحت پنجاب سلمان رفیق سمیت مانیٹرنگ کمیٹی کے ارکان کو دوپہرڈھائی بجے طلب کر لیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں